133

جموں۔کشمیرمیں آرٹیکل 370 کے خاتمہ کا ایک سال مکمل، وادی کے کئی علاقوں میں سکیورٹی کے سخت انتظامات

گزشتہ سال 5 اگست کو جموں و کشمیر کو مرکز کے زیر انتظام کرنے اور دیگر کئی اہم اقدامات نفاذ کرنے کےحکومت کے فیصلےکو ایک سال مکمل ہونے کے موقع پر ممکنہ احتجاجی مظاہروں کے پیش نظر انتظامیہ نے وادی کشمیر میں احتیاطی طور پرحکم امتناعی نافذ کردی ہے۔
ممبئی: گزشتہ سال 5 اگست کو جموں و کشمیر کو مرکز کے زیر انتظام کرنے اور دیگر کئی اہم اقدامات نفاذ کرنے کےحکومت کے فیصلےکو ایک سال مکمل ہونے کے موقع پر ممکنہ احتجاجی مظاہروں کے پیش نظر انتظامیہ نے وادی کشمیر میں احتیاطی طور پرحکم امتناعی نافذ کردی ہے۔ تاہم ممبئی میں مقیم کشمیری طالب علم حکومت کے اس فیصلے پر کئی پہلوؤں سے پر امید نظر آتے ہیں۔ ایک طالب علم جاوید جیلانی کے مطابق کشمیر کے تعلیمی نظام کی جانب توجہ دی جائے تو محسوس ہوتا ہے کہ ریاست کے حکمرانوں نے کبھی سنجیدگی سے اس طرف توجہ ہی نہیں دی اورنچلی جماعتوں اور جونیئر کالجوں میں ڈراپ آؤٹ کا تناسب انتہا پررہا تھا لیکن گزشتہ ایک سال میں ریاست میں کئی مثبت پہلو بھی سامنے آئے ہیں۔ جموں وکشمیرکے لیے امن اور ترقی کا نیا دور 5 اگست 2019 کے تاریخی دن کو قرار دیا جاسکتا ہے۔ آج کا دن اس لیے بھی بڑا ہے کیونکہ جموں کشمیر کی ایک طالبہ نے یوپی ایس سی کے امتحان میں کامیابی حاصل کی ہے جوکہ ایک خوش آئند بات ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں