113

شہر میں بندشیں برقرار،تجارتی سرگرمیاں ہنوز معطل

سرینگر// سرینگر سمیت جنوب و شمال میں ہفتہ کو بھی لاک ڈائون کے نتیجے میں عام زندگی رفتار پکڑنے میں ناکام ہوئی۔ پائین شہر میں بدستور سڑکوں کو یک طرفہ خار دار تاروں سے بند رکھا گیا تھا،جبکہ کئی جگہوں پر دیگر قسم کی رکاوٹوں سے بند رکھا گیا تھا۔سیول لائنز میں بھی اہم سڑکوں،اہم پلوں و چوراہوں کو خار دار تاروں سے بند رکھا گیا تھا۔لالچوک میں گھنٹہ گھر کے ارد گرد والا علاقہ ہنوز سیل رہااور کسی بھی نجی گاڑی کو اس جانب گزرنے کی اجازت نہیں دی گئی۔عید کے بعد لاک ڈائون کے اس مرحلے میں پائین شہر اور سیول لائنز علاقوں میں کم و بیش تمام دکانیں،کاروباری مراکز اور نجی دفاتر بند ہیںجبکہ معروف بازاروں میں بدستور صحرائیں مناظر دیکھنے کو مل رہے تھے۔سڑکوں پر میوہوسبزی فروشوں کے علاوہ دیگر اشیاء فروخت کرنے والے لوگ بھی مجموعی طور پر نظر نہیں آئے۔صبح کے وقت اگرچہ چند چھوٹی مسافر بردار گاڑیاں اور آٹو رکھشا سڑکوں پر نظر آئے تاہم دن ڈھلنے کے بعد انکی تعداد میں بھی کافی کمی واقع ہوئی۔مجموعی طور پر مسافر بردار گاڑیوں کے پہیہ جام رہے تاہم نجی گاڑیوں کی نقل و حرکت دیکھنے کو ملی۔شہر کے صحت افزا مقامات نشاط ،شالیمار، بوٹینکل گارڈن اگرچہ بدستور بند ہیں،تاہم ان باغات کے اردگرد ہفتے کی شام کو لوگوں کی اچھی خاصی تعداد نظر آئی جبکہ بیلوارڈ پر بھی دیگر دنوں کے برعکس غیر معمولی گہما گہمی دیکھنے کو ملی۔اس سڑک پر نجی گاڑیوں کی بڑی تعداد نقل و حرکت کر رہی تھیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں